33

انتظامیہ بدل گئی لیکن کلرسیداں میں تجاویزات نہ ختم ہو سکیں

انتظامیہ بدل گئی لیکن کلرسیداں میں تجاویزات نہ ختم ہو سکیں

Kallar Syedan Tajwazt

Kallar Syedan Tajawat

Publiée par Pothwar News Network sur Mercredi 7 novembre 2018

کلرسیداں(نامہ نگار)انتظامیہ بدل گئی لیکن کلرسیداں میں تجاویزات نہ ختم ہو سکیں،ٹی ایم اے کلرسیداں کی جانب سے دی گئی از خود تجاویزات ختم کرنے کی تاریخ بھی گزر گئی ،لیکن مسئلہ وہیں کا وہیں،انتظامیہ کی مبینہ چپ نے کئی سوال کھڑے کردیا،تفصیلات کے مطابق موجودہ حکومت کے قیام کے بعد جس طرح پور ے پاکستان میں ناجائز تجاویزات کے خلاف کارروائی کی گئی تھی اسی طرح کلرسیداں کی تحصیل انتظامیہ نے بھی کلرسیداں کی شاہراوں پر ازخود تجاویزات ختم کرنے کے لئے 25نومبر کی تاریخ متعین کی ،جس کے گزر جانے کے بعد یہ اُمید ہو چلی تھی کی تجاویزات کے خاتمے کے لئے بلا تخصیں کارروائی ہو گی لیکن اے بسا آرزوکی خاک شد،کے مصداق کلرسیداں کو ناجائزتجاویزات سے پاک نہ کیا جاسکا،جس نے تحصیل انتظامیہ کی اس حوالے سے مبینہ خاموشی نے کئی سوال کھڑے کردئیے ہیں،دوسری طرف کلرسیداں کی موجودہ اسسٹنٹ کمشنر کے پیشرو نے میڈیا کو بتایا تھا کہ کلرسیداں میں سرکاری املاک پر ناجائز قبضے کے حوالے سے تما م سرکاری محکموں نے ڈی سی او راولپنڈی کو منفی کی رپورٹ دی ہے،تاہم بعد ازاں دوبارہ کارروائی کی گئی اور کچھ عمارتوں کو جو ناجائز تجاویزات کے زمرے میں آتی تھیں کو نشان لگائے گئے لیکن ازخود تجاویزات ہٹانے کے حوالے سے دی گئی تاریخ گزر جانے کے باوجود بھی اب جبکہ کلرسیداں میں نئی اسسٹنٹ کمشنر بھی تعینات بھی چکی ہیں،لیکن اس سب کے باوجود کلرسیداں کا مین بازار ،مغل بازار ،پنڈی روڈ ،چوآروڈ اور گجر خان روڈ سمیت ضلع کونسل کی جگہ پر قائم ناجائزتجاویزات اور قبضہ برقرار ہے اور تحصیل انتظامیہ اس حوالے سے خاموش ہے،شہری حلقوں نے ڈی سی او راولپنڈی اور وزیر اعلی پنجاب سے اپیل کی ہے کہ کلرسیداں میں بر سوں سے قائم ناجائز تجاویزات کے خلاف فی الفور کارروائی کی جائے ،
kallar-syedan-tajawjat1
kallar-syedan-tajawjat2
kallar-syedan-tajawjat3
kallar-syedan-tajawjat4

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں