ch-fawad 40

ایک سال کے اندر میڈیا یونیورسٹی کا قیام وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد

ایک سال کے اندر میڈیا یونیورسٹی کا قیام وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین کی پاکستان فلم پروڈیوسرز ونمائش کنندگان کی ایسوسی ایشن کے وفد سے ملاقات کے دوران گفتگو
سعودی عرب پاکستان سے فلمیں اور ڈرامے خرید رہا ہے
لاہور۔( پی این این )وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین نے کہا ہے کہ وطن عزیز کے سافٹ امیج کو دنیا کے سامنے پیش کرنے کیلئے پاکستان فلم انڈسٹری کو مضبوط کرنے کی ضرورت ہے‘حکومت پاکستانی ڈراموں کو فروغ د ینے کی غرض سے ملک میں چلنے والے انٹرنیشنل ڈراموں پر ٹیکس لگا رہی ہے، سعودی عرب پاکستان سے فلمیں اور ڈرامے خرید رہا ہے جس سے فلم انڈسٹری اور معیشت میں بہتری آئے گی‘ ایک سال کے اندر میڈیا یونیورسٹی کا قیام عمل میں لایا جارہا ہے جس میں اے پی این ایس اور براڈ کاسٹرز کو پارٹنر بننے کی آفر کی ہے‘ ‘ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ہفتہ کی شام مقامی ہوٹل میں پاکستان فلم پروڈیوسرز ونمائش کنندگان کی ایسوسی ایشن کے وفد سے ملاقات کے دوران کیا‘ وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات نے کہا کہ پاکستانی فلموں کی تعداد میں اضافہ بہت ضروری ہے جس کیلئے تھوڑی سی قربانیاں سینما والوں کو بھی دینی پڑیں گی اگر بھارت و دیگر ممالک کی فلموں کی نسبت پاکستانی فلم کیلئے زیادہ شیئرز رکھے جائےںتو ہم وعدہ کرتے ہیں کہ پاکستانی فلم انڈسٹری کو ٹیکس سے استثنیٰ قرار دے دیں گے‘ انہوں نے کہا کہ ہم نے چیئرمین ایف بی آر کو خط لکھا ہے کہ انٹرنیشنل ڈراموں پر ٹیکس لگایا جائے کیونکہ پاکستانی ڈراموں پر باہر سے آنیوالے ڈراموں کی نسبت زیادہ لاگت آرہی ہے اور یہ ٹیکس فی منٹ کے حساب سے لگایا جائیگا تاکہ پاکستانی ڈراموں کو زیادہ پذیرائی مل سکے‘ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب پاکستان سے ایک فلم خرید رہا ہے جس کے بعد مزید تین فلمیں اور ڈرامے بھی سعودی عرب کو فروخت کئے جائینگے جس سے پاکستانی فلم انڈسٹری اورمعیشت میں بہتری آئے گی‘ انہوں نے کہا کہ مصر اور پاکستان مشترکہ فلم سازی کی طرف جارہے ہیں کیونکہ مصر فلم سازی کی بہت بڑی منڈی ہے۔
ایک سال کے اندر میڈیا یونیورسٹی کا قیام وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں