raja-basharat-naehli 47

صوبائی وزیر قانون پنجاب بشارت راجہ کی نا اہلی کے لیے درخواست دائر

صوبائی وزیر قانون پنجاب بشارت راجہ کی نا اہلی کے لیے درخواست دائر
درخواست ان کی مبینہ اہلیہ و سابق رکن پنجاب اسمبلی سیمل راجہ کیجانب سے دائر کی گٸ
اسلام آباد (پی این این ) صوبائی وزیر قانون پنجاب بشارت راجہ کی نا اہلی کے لیے اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست دائر کردی گی درخواست ان کی اہلیہ و سابق رکن پنجاب اسمبلی سیمل راجہ کیجانب سے دائر کی گٸ۔ درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ بشارت راجہ نے کاغذات نامزدگی میں اپنے مکمل اثاثے ظاہر نہیں کیے، بشارت راجہ نے بیان حلفی میں بیرون ممالک سفر اور اخراجات کی تفصیلات تحریر نہ کر کے حقاٸق کو چھپایا۔ بشارت راجہ نے بیان حلفی میں پری گل آغا کو بیوی ظاہر کیا جبکہ وہ 2015 میں اسکو طلاق دے چکے ہیں۔ بشارت راجہ نے بیان حلفی میں بہروز کمال کو بیٹا ظاہر کیا جبکہ انکی جانب سے اسٹامپ پیپر پر تحریر شدہ بیان حلفی کے مطابق وہ بہروز کمال کو بوجہ نافرمانی عاق کر چکے ہیں۔ بشارت راجہ نے بیان حلفی میں اپنا پیشہ کاروبار تحریر کیا مگر کاغذات نامزدگی میں کاروبار کی تفصیل ظاہر نہ کی گٸ۔ غلط بیانی کرنے پر بشارت راجہ آرٹیکل 62 ون ایف پر پورا نہیں اترتے۔ لہذاعدالت بشارت راجہ کو نا اہل قرار دیتے ہوۓ الیکشن کمیشن کو صوبائی وزیر قانون پنجاب بشارت راجہ کی کامیابی کا نوٹیفکیشن معطل کرنے کی ہدایت جاری کرے۔ درخواست گزار کی جانب سے الیکشن کمیشن چیئرمین ایف بی آر ، ڈی جی ایف آئی اے اور بشارت راجہ کو فریق بنایا گیا ہے۔ صوباٸ وزیرقانون پنجاب بشارت راجہ راولپنڈی کے حلقہ پی پی 14 سے ایم پی اے منتخب ہوئے تھے
صوبائی وزیر قانون پنجاب بشارت راجہ کی نا اہلی کے لیے درخواست دائر

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں