maj-shabbir-shareef 61

گجرات کے سپوت میجر شبیر شریف شہید(نشان حیدر) کا 47 واں یوم شہادت

گجرات کے سپوت میجر شبیر شریف شہید(نشان حیدر) کا 47 واں یوم شہادت عقیدت واحترام کے ساتھ منایا گیا

میجر شبیر شریف شہید ( نشان حیدر ) کا 47 واں یوم شہادت 6 دسمبر کوعقیدت واحترام کے ساتھ منایا گیا۔ میجر شبیر شریف 28 اپریل 1943ء کو گجرات میں پیدا ہوئے۔ انہوں نے 21 سال کی عمر میں 1964 میں پاک فوج میں شمولیت اختیار کی، آپ شروع ہی سے وطن عزیز پر جان قربان کرنے کا جذبہ رکھتے تھے۔ پاک بھارت1965 کی جنگ میں وہ بحیثیت سیکنڈلیفٹیننٹ شریک ہوئے اور جنگ میں بہادری سے دشمن کا مقابلہ کرنے پر انہیں ستارہ جرات سے نوازا گیا۔ میجر شبیر شریف شہید 3 دسمبر 1971 ء کو سلیمانکی سکیٹر میں فرنٹئیر رجمنٹ کی ایک کمپنی کی کمانڈ کر رہے تھے اور انہیں ایک اونچے بند پر قبضہ کرنے کا ٹارگٹ دیا گیا تھا۔ میجر شبیر شریف کو اس پو زیشن تک پہنچنے کے لئے پہلے دشمن کی بارودی سرنگوں کے علاقے سے گزرنا اور پھر 100 فٹ چوڑی اور 18فٹ گہری ایک دفاعی نہر کو تیر کر عبور کرنا تھا۔ دشمن کے توپ خانے کی شدید گولہ باری کے باوجود میجر شبیر شریف نے یہ مشکل مرحلہ طے کیا اور دشمن پر سامنے سے ٹوٹ پڑے۔ تین دسمبر کی شام تک دشمن کو اس کی قلعہ بندیوں سے باہر نکال دیا۔ چھ دسمبر کی دوپہر کو دشمن کے ایک اور حملے کا بہادری سے دفاع کرتے ہوئے میجر شبیر شریف اپنے توپچی کی اینٹی ائیر کرافٹ گن سے دشمن ٹینکوں پر گولہ باری کر رہے تھے کہ ٹینک کا ایک گولہ انہیں لگا اور وہ شہید ہوگئے۔شہید کے ایصال ثواب کیلئے ملک بھر میں مختلف مقامات پر قرآن خوانی کا اہتمام بھی کیا گیا ہے، جب کہ شہید کے بلند درجات کیلئے دعائیہ تقریبات کا اہتمام بھی کیا گیا ہے۔علی الصبح پاک فوج کے چاق و چوبند دستے کی جانب سے سے شہید کے مزار پر فاتحہ خوانی اور پھولوں کی چادر چڑھائی گئی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں